سلیمان شہباز کو ایف آئی اے کی جانب سے کلین چٹ مل گئی

ذرائع کے مطابق آج بروز ہفتہ 21 جنوری کو وزیراعظم پاکستان میاں محمد شہباز شریف کے صاحبزادے سلیمان شہباز کے خلاف لاہور کی اسپیشل سینٹرل کورٹ میں وفاقی تحقیقاتی ادارے کی جانب سے دائر منی لانڈرنگ سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ سماعت میں ایف آئی اے نے سلیمان شہباز کیخلاف چالان عدالت پیش کیا۔ عدالت میں تفتیشی افسر نے چالان کو متعلقہ اتھارٹی کی منظوری کے بعد پیش کیا گیا ہے۔ اس موقع پر ایف آئی اے نے عدالت کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ کسی قسم کی کک بیکس کے شواہد نہیں ملے، جس پر جج نے سلیمان شہباز کے وکیل سے سوال کیا کہ کیا آپ ضمانت واپس لینا چاہتے ہیں؟ جس پر ایف آئی اے کے تفتیشی افسر نے کہا کہ سلیمان شہباز اور طاہر نقوی کے کیس میں ملوث ہونے کے ثبوت نہیں ملے ہیں۔ اس پر عدالت سے سلیمان شہباز اور طاہر نقوی نے ضمانت کی درخواست واپس لے لی۔ عدالت نے سلیمان شہباز کو ٹرائل میں چار فروری کو طلب کرلیا۔ سماعت میں ایف آئی اے کی جانب سے سلیمان شہباز کی حد تک منی لانڈرنگ کا چالان پیش کیا گیا، جب کہ عدالت نے سلیمان شہباز کی عبوری درخواست ضمانت واپس کردی۔

 

Leave A Reply

Your email address will not be published.

ٹول بار پر جائیں