اسپیکر پنجاب اسمبلی نے اسمبلی کی تحلیل سے متعلق خاموشی توڑ دی

اسپیکر پنجاب اسمبلی سبطین خان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں نے جو حلف اٹھایا ہوا ہے اس کی پاسداری کررہا ہوں، وزیراعلیٰ کو بچانا میرا کام نہیں، حکومت جانے اور اس کا کام جانے، میں اس ایوان کا کسٹوڈین ہوں، ہرکوئی اپنے آئینی دائرے میں رہ کر اپنا اپنا کام کرے،گورنر صاحب غیر قانونی آرڈر پاس نہ کریں،گورنر آئینی ادارے کی نمائندگی کر رہے ہیں تو اسپیکر بھی آئینی ادارے کی نمائندگی کر رہا ہے۔ اسپیکر پنجاب اسمبلی کا کہنا تھا کہ گورنر نے خط لکھ کر تحریک عدم اعتماد اورتحریک اعتماد کے بارے میں لکھا ہے لیکن پرویز الہٰی پر گورنر کے الزامات کا تعلق گورنر سے نہیں ہے،کسی کو وزارت دینا یا نہ دینا گورنر کا مسئلہ ہی نہیں ہے،گورنر  جاری اسمبلی سیشن میں نیا سیشن نہیں بلاسکتے، گورنر کے خط کا جواب دے دیا ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم چاہتے ہیں اسمبلی ٹوٹے، ہم عوام کے پاس جانا چاہتے ہیں جب کہ گورنر چاہتے ہیں ہم عوام کے پاس نہ جائیں اس لیے روڑے اٹکائے جارہے ہیں، ہم ان روڑوں کو دور کریں گے اور عوام میں جائیں گے۔

 

Leave A Reply

Your email address will not be published.

ٹول بار پر جائیں