طالب علم کی تضحیک پر نجی سکول کو بھاری جرمانہ

ذرائع کے مطابق کراچی کے نجی سکول میں اردو میں بات کرنے پر طالب علم سے بدسلوکی اور اس کی تضحیک کرنے پر محکمہ تعلیم نے سکول کی رجسٹریشن منسوخ کردی اور ایک لاکھ روپے جرمانہ بھی عائد کیا ہے۔ محکمہ تعلیم کا کہنا ہےکہ انکوائری کمیٹی کی رپورٹ کے مطابق طالب علم کو اردو بولنے پر سزا دی گئی اور بدسلوکی کا نشانہ بنایا گیا۔ وزیرتعلیم سندھ نے کہا کہ سیکھنے کے عمل میں مادری زبانیں بولنے پر کسی بچے پر جبر نہیں کیا جاسکتا، مادری زبان میں تعلیم حاصل کرنا صوبے کے بچوں کا قانونی حق ہے۔ آل پرائیوٹ اسکولز منیجمنٹ ایسو سی ایشن سندھ کا کہنا ہےکہ بچےکو اردو بولنے پر ہراساں کرنے پر شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں اور ٹیچر کی اس حرکت پر تمام والدین سے معذرت کرتے ہیں۔

 

Leave A Reply

Your email address will not be published.

ٹول بار پر جائیں